اسے کہیں دور جانا ہے ؟ غزل

اسے کہیں دور جانا ہے وہ مجھ سے آکے کہہ دیتا

کہیں وعدہ نبھانا  ہے مجھ سے کہہ دیتا

اعتبار میرا کر لیتا مان میرا بڑھا دیتا

جاناں! مجھ کو جانا  ہے وہ مجھ سے کہہ دیتا

میں یہ دکھ بھی سہی جاتی کہ ہم ساتھ نہیں ہوں گے

مجھے اس کو ہی لانا ہے وہ مجھ سے کہہ دیتا

میں حوصلہ اتنا رکھتی ہوں کہ خود کو بھی منا لیتی

اسے کس کو منانا ہے وہ مجھ سے آکر کہہ دیتا

میں اس کو بھی منا لیتی جس کو وہ پانا چاہتا ہے

مجھے اس کو ہی پانا  ہے وہ مجھ سے آکے کہہ دہتا

شئیر کرنا مت بھولیں

اردو شاعری پیج آپ کے لئے ہمیشہ اچھی شاعری لاتا رہے گا

اپنا تبصرہ بھیجیں