وہ باتیں جن پر عمل کرنے سے میاں بیوی میں محبت بڑھ جائے گی ایک مثالی رومینٹک جوڑی بن جائے گی انشااللہ خو بصورت تحریر

عمومی طور پر یہ دیکھا گیا ہے کہ شادی کے ابتدائی چند سال تو بہت رومینس ہوتا ہے مگر چند سال گزرتے ہی رومینس کم ہونے لگتا ہے۔ ایسا ہر ایک کے ساتھ نہیں ہوتابلکہ ان کے ساتھ ہوتا ہے جنھوںنےاس گولڈن پیریڈ میں اپنےہمسفر کو سمجھنےکی کوشش نہیں کی ، اگر ایساہواہےتواب کوشش کیجئے۔ انسان کے اندر اللہ نے حکمت کا مادہ بھی رکھا ہے۔ وہ دماغ استعمال کرکے ہر مشکل سے نکلنےکی کا راستہ نکال لیتا ہے۔

islamicblog.in
تو چند باتیں ہیں جن پر عمل کیجئے ۔ سب سے پہلے تو ایک دوسرے کے انٹریسٹ جاننے کی کوشش کیجئے ۔ یہ ہی رومینس کی بنیاد ہے۔ اکثر لوگ اپنا تو سوچتے ہیں مگر اپنے ہمسفر کی پسند نا پسند کا خیال نہیں کرتے جس سے یہ تعلق پھیکا ہوجاتا ہے۔ آپ کو زبانی یاد ہونا چاہئے کہ آپ کے ہمسفر کی تاریخ پیدائش، آپ کی شادی کی تاریخ۔۔۔ پھر آپ اس کو بھر پور طریقے سے منائیں۔ شادی کی تاریخ کو دونوں ایک دوسرے کو خوبصورت تحائف دیں۔ خوب ماضی کے خوبصورت دنوں کی یادیں تازہ کریں۔ یہ عمل اگلے سال تک آپ کے اس خوبصورت بندھن کو تروتازہ رکھے گا۔ ہمیشہ مثبت سوچئیے ۔ منفی خیالات۔۔ بھی اس بندھن کو کمزور کرتے ہیں۔ جس میں شک کرنے کی عاد ت سرفہرست ہے۔ ہوسکتا ہے کہ دوریوں کی وجہ باہر کی پریشانیاں ہوں۔ بیوی سمجھداری سے شوہر کی دلجوئی کرے۔ اگر وہ پریشان ہے تو اس کو حوصلہ دے۔ نا کہ مایوسی کی باتیں کرکے اس کو مزید پریشانیوں کے چنگل میں پھنسا دے۔ اس کو مشورے دے کہ کیسے وہ ان پریشانیوں سے نکل سکتا ہے۔ ہمیشہ کھانا ایک ساتھ کھائیں۔ اکثر مرد باہر سے کھانا کھا آتے ہیں۔ اگر باہر سے بھی کھایا ہے تو پھر بھی گھر بیگم کے ساتھ تھوڑا بہت ضرور کھائیں۔ باہر سیر و تفریح کے لیے ہفتے میں ایک دن ضرور نکالئے۔ چاہے یہ وقت ایک دوگھنٹے ہی ہو۔ یکسانیت انسان کو ذہنی طور پر اضطراب میں مبتلا کردیتی ہے۔ قدرت کے نظاروں سے لطف اندوز ہونےکے ساتھ ساتھ محبت کی باتیں بھی کیجئے۔ آپ ہمسفر ہیں۔ کھل کر محبت کا اظہار کیجئے ۔

mangobaaz.com
ہمیشہ نرم اور عزت والے لہجے میں بات کیجئے ۔ جب لہجے سے عزت ختم ہوجائے تو محبت بھی ختم ہونے لگتی ہے۔ یہ رشتہ بہت خوبصورت ہے ۔ اس میں عزت کی خاص اہمیت ہے۔ ہمیشہ صفائی ستھرائی کا خیال رکھئے۔ پسینے سے شرابور ، ایک دوسرے کی قربت کا لطف پھیکا ہوجاتا ہے۔ خوشبو کا استعمال کیجئے۔ بیوی ہلکا پھلکا میک اپ ضرور کرے چاہے ہلکی سی لپ اسٹک ہی لگا لے۔کبھی ناراضگی کی حالت میں مت سوئیں۔ اصل میں تب نیند کسی کو نہیں آتی ۔ مگر یہ لمحات دوریاں پیدا کرتے ہیں۔ دل صاف کرکے سوئیں۔ ایک دوسرے کی ضروریات کا خیال رکھیں۔ اگر شوہر کو ضرورت ہے تو بیوی پوری کرے۔ اور بیوی کی ضرورت شوہر پوری کرنے کی کی کوشش کرے۔
کفایت شعاری کی عادت اپنائیں۔ زیادہ خرچے سے بجٹ آءٹ رہتا ہے۔ جس سے رومینس کی طرف دھیان ہی نہیں جاتا۔ بس اخراجات میں ہی دماغ الجھا رہتا ہے۔ اچھے معاشی حالات سکون کا باعث ہوتے ہیں۔ اور۔۔ رومینس کےلیے سکون شرط ہے۔آپ اس آرٹیکل کو آگے ضرور شئیرکیجئے تاکہ اور بھی دوست احباب مستفید ہوسکیں۔ شکریہ!

اپنا تبصرہ بھیجیں