پاکستان کے گائوں میں انتہائی شرمناک شادی کی کوشش ناکام

نواحی گاؤں میں نابالغ بچی اور بچے کا نکاح، پولیس نے دونوں کے والدین ، نکاح خواں اور گواہوں کو گرفتار کر لیا ہار پہنے کم سن دلہا اور دلہن کو لوگ تھانے آ کر دیکھتے رہے گزشتہ روز دوپہر کے وقت گاؤں رشید پور (جھنگ) میں موضع ڈل تحصیل احمد پور سیال کارہائشی گوندل برادری کا منظور حسین نامی شخص اپنے 8سالہ بچے علی کا فیملی کے دیگر لوگوں کے ہمراہ بڑی دھوم دھام سے اپنے رشتہ دار محمد اسلم گوندل کی 7سالہ بچی ریحانہ سے نکاح کرنے  (جاری ہے) ہ

آیا نکاح خوان چوہدری سلطان محمود نے نکاح پڑھایا ہی تھا کہ اطلاع ملنے پر تھانہ اٹھارہ ہزاری پولیس موقع پر پہنچ گئی پولیس نے ہار پہنے کمسن دلہا اور دلہن اور شرکاء کی تصاویر ویڈیو بنانے کے بعد نکاح خوان بچوں کے والد اور چار گواہان نواز مظفر سلطان و غیرہ کو گرفتار کرلیا جبکہ دلہا دلہن کو بھی اپنی تحویل میں  (جاری ہے) ہ

لیکر انہیں تھانے لے آئی ایس ایچ او کے کمرے میں اکٹھے صوفے پر بیٹھے نابالغ دلہا دلہن کو لوگ تھانے آ کر دیکھتے رہے تاہم پولیس نے انہیں شام کے وقت واپس بھیج دیاپولیس کا کہنا ہے کہ ابھی واقعہ کی چھان بین جاری ہے جس کے بعد ہی مزید کوئی کارروائی کرنے یا نہ کرنے کا فیصلہ کیا جائے گا۔

کیٹاگری میں : news

اپنا تبصرہ بھیجیں