مرد غیر عورت کے پاس کیوں جاتا ہے؟ ایک ایسی شاندار تحقیق جو ہر بیوی کو ضرور جاننی چاہیے

مرد کے اندر اک چیز جنم سے ہی موجود ہوتی ہے جسے مردانگی کہا جاتا ہے۔مرد میں یہ چیز کسی عضو کا نام نہیں بلکے ایک احساس کا نام ہےاور اس احساس کو وہ بہت طریقوں سے محسوس کرتا ہے۔مرد کبھی کبھی مار کٹائی سے ، کبھی بہت زیادہ محنت کر کے تو کبھی بستر میں عورت کو خوش کر کے مردانگی محسوس کرتا ہے مگر تب جب کوئی اُسے اس کا احساس دلائے ورنہ اس بات کا اندازہ لگانا کے یہ مردانگی تھی یہ ممکن نہیں۔ اس لئے مرد کی مردانگی کا احساس دلائے تو ہی اُسی اس احساس کا پتہ چلتا ہے۔ اس ارٹیکل میں ُکھل کے اُن خواتین کو یہ بات سمجھانا چاہتا ہوں جن کے مرد دوسری عورتوں کے پاس جاتے ہیں اور وہ اس بات کا غم برداشت نہیں کر سکتی۔ (جاری ہے) ہ


عورت بہت بڑے غم اور دُکھ برداشت کر سکتی ہے مگر اپنی عزیز چیزوں اور اپنے شوہر کی شراکت کسی بھی عورت کو گوارہ نہیں۔جب مرد کسی غیر عورت کے پاس جاتا ہے تو اُس کی بہت سی وجہ ہو سکتی ہیں مگر یہاں جو وجہ بیان کی جارہی ہے اُن کے ہونے کے امکانات زیادہ ہیں یا پھر یوں سمجھ لیں کے ایک بار جو مرد کسی عورت کے پاس جاتا ہے وہ پھر سے اُس عورت کے پاس کیوں جانا چاہتا ہے۔باہر کی عورت اور گھر کی عورت کے ساتھ مرد کی ہم بستری ایک جیسی ہوتی ہے، اور مرد اپنی پسند کے سیکس سٹائل سے ہی سیکس کرتا ہے خواہ ہو بیوی ہو یا باہر کی کوئی عورت ۔ سیکس کرنے میں کوئی تبدیلی نہیں مگر سیکس کے بعد گزرے چند لمحات میں تبدیلی کی وجہ سے مرد دبارہ اُس عورت کے پاس آتا ہے۔ (جاری ہے) ہ

......
loading...

میاں بیوی اکثر ہم بستری کے بعد روز مرہ کی باتیں کرنے لگتے ہیں اور زیادہ تر تھکارٹ کی وجہ سے سو جاتے ہیں مگر باہر کی عورت سیکس کے بعد مرد کو اُس کی اس مردانگی کا احساس دلاتی ہے جس تعریف یا خوشنودی کو سننے کیلئے مرد دبارہ اُس کے پاس آتا ہے جو کہ اکثر شادی کے بعد خواتیں نہیں کرتی ۔ ( آج تو تمھارا ارادہ مجھے مار ڈالنے کا تھا) ، ( آج تو مجھے لگا کے میری جان ساتھ ہی لو گے) ، ( جس طرح کا سیکس آپ کرتے ہو جسم کی ساری پیاس بجھ جاتی ہے) بظاہر پڑھنے میں یہ جملے کافی مزاق کرنے والے جملے لگتے ہیں مگر مرد پر ان جملوں کا بہت گہرا احساس ہوتا ہے۔ بیوی اور باہر کی عورت میں اک یہ بات بہت الگ ہے ۔ اکثر عورتیں یوں تو مرد کے ساتھ یم بستری کے لئے نہ تو نہیں کرتی مگر اُن کا من نہیں مانتا کہ مرد اُسے ہاتھ لگائے جو کہ کوئی بھی وجہ ہو سکتی ہے جیسے کسی چیز کی خواہش کی اور وہ نہ مل سکی ، ماں ، بہن ، بھائی ، کی وجہ سے لڑائی تو وہ عورت سیکس کو اک روٹین کام سمجھ کر کرتی ہے اور مرد کے ساتھ سیکس کے بعد اُس سیکس پر بات نہیں کرتی اور مرد کا بھی اُس میں شوق ختم ہو جاتا ہے۔ (جاری ہے) ہ

اکثر شوہر کے ساتھ ہم بستری کے بعد پیار ، تہمل، اور نرم گوئی سے اُس کی مردانگی کے اس احساس کی تعریف اُس کو آپ میں اپنا شوق بنائے رکھنے کیلئے بہت مفید ثابت ہو گا۔ مرد اگلی دفعہ اور احتیات اور جوش کے ساتھ آپ کی جسمانی ضروریات کو پورا کرنے کی کوشش کرے گا۔