پہلی بار بغیر میک اپ کے بیوی کو دیکھنے کے بعد شوہر نے بیوی کے ساتھ کیا کیا

تمام مرد اپنی بیگمات کی ظاہری اچھائیوں اور برائیوں ،خوبیوں اور خامیوں سے واقف ہوتے ہیں۔ اس لیے انھیں اپنی تمام تر اچھی بری خصوصیت سمیت قبول کرتے ہیں ۔ لیکن زندگی کے ہمسفر کی کوئی ایسی خامی جس سے کوئی مرد پہلے سے ناواقف ہو اگر حادثاتی طور پر سامنے آجائے تو نتیجہ کچھ ایسا بھی ہوسکتا ہے جیسا اس واقعے میں ہوا۔متحدہ عرب امارات کے ایک شخص نے اپنی بیوی کو جب پہلی بار میک اپ کے بغیر (جاری ہے) ہ


دیکھ لیا تو یہ تجربہ اسے اس قدر ناگوار گزرا کہ وہ اسے چھوڑنے پرمجبور ہوگیا۔ شارجہ کے مشہور ساحل الممزار پر ایک عرب جوڑا تیراکی کی غرض سے آیا۔ خاتون جب نہانے کے بعد پانی سے باہر آئی تو اس کے شوہر نے اسے ناخوشگوار حیرت کے ساتھ اس کے چہرے کو دیکھا اور اسے فوری طور پر طلاق دے ڈالی۔ شوہر کا موقف تھا کہ اس کی بیوی چہرے پر ہر وقت میک اپ کی کئی تہیں چڑھائے رکھتی تھی اور اس نے چہرے پر پلاسٹک سرجری بھی کروا رکھی تھی۔لیکن اس کا اصلی روپ تو اس روز نہانے کے بعد سامنے آیا۔ وہ بالکل بھی خوبصورتی کے اس مقام پر نہیں کھڑی تھی جس اسے دیکھ کر میں نے اسے شادی کا فیصلہ کیا تھا (جاری ہے) ہ


۔اس لیے وہ مزید مجھ سے شادی کے بندھن میں بندھے رہنے کی حقدار نہیں تھی۔دوسری جانب خاتون کا ایک ماہر نقسیات ڈاکٹر عبد العزیز سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اسے اس واقعے سے شدید ذہنی صدمہ پہنچا تھا۔ اس کے خاوند نے اسے اپنی صفائی یا وضاحت میں کچھ کہنے کا موقع تک نہیں دیا ۔ جبکہ اس کا چہرے کے دو مختلف روپ رکھ کر اپنے خاوند کو دھوکا دینے کا قطعی طور پر کوئی ارادہ نہیں تھا ۔اگر میک اپ سے اس کی شکل و شباہت میں کوئی غیر معمولی تبدیلی آتی تھی تو اس میں اس کا کوئی قصور نہیں تھا

اپنا تبصرہ بھیجیں