لاہور میں ۱۴ سالہ لڑکا اور لڑکی پریم کہانی کا ایسا خوفناک انجام کہ جان کر انسان کانپ اٹھے

لاہور کے نواحی علاقے رائیونڈ میں ناجائز تعلقات کے شبہ میں ملزمان نے 14سالہ نوجوان کا نازک عضو کاٹنے کے بعد دونوں آنکھیں بھی نوچ ڈالی۔کے مطابق رائیونڈ کے علاقے میں لڑکی کے اہل خانہ نے ناجائز تعلقات کے شبہ میں 14سالہ نوجوا ن لڑکے کو بیہمانہ تشدد کا نشانہ بنایا اور اس کا نازک عضو کاٹنے کے بعد آنکھیں نوچ کر بینائی سے بھی محروم کر دیا ۔ ۔جاری ہے۔


لرزہ خیز واقعہ فروری کے آخری ہفتے کے دوران پیش آیا جس کے بعد متاثرہ نوجوان کے اہل خانہ نے ملزمان کے خلاف احتجاجی مظاہر ہ کیا تو گزشتہ ہفتے خبر منظر عام پر آئی جس کے بعد پولیس نے لڑکی کے اہل خانہ کے خلاف مقدمہ درج کیا ۔پولیس حکام کا کہنا ہے کہ نویں جماعت کا طالب علم عیش اس وقت تشویشناک حالت میں ہسپتال داخل ہے جہاں ڈاکٹر اس کی زندگی بچانے کی کوشش کر رہے ہیں ۔واقعے کے بعد مظلوم نوجوان کے والد جاوید کا کہنا ہے کہ لڑکی کے والد حنیف کو شبہ تھا کہ اس کی بیٹی کا میرے بیٹے کے ساتھ ناجائز تعلق ہے جس کے بعد اس نے اپنے ساتھیوں عامر ، اشفاق اعظم اور وقار نے اسے تشدد کا نشانہ بنایا اور پھر بربریت کی انتہا کر دی ۔ ۔جاری ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ لڑکی کے والد اور اس کے ساتھیوں نے ناجائز تعلقات کے شبہ پر نوجوان کو فروری کے آخری ہفتے میں سکول کے باہر سے اغواءکیا اور پھر دریائے راوی کے گنجان علاقے میں لے گئے جہاں ملزمان نے بدلہ لینے کیلئے اس کے نازک عضو کو تن سے جد اکر دیا اور آنکھیں نوچ کر فرار ہو گئے ۔ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف نے اپنے بیان میں 5ملزمان کی گرفتاری کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ تفتیش کے بعد کیس کا چالان عدالت میں پیش کیا جائے گا ۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول کریں ۔↓↓↓۔

کیٹاگری میں : news

اپنا تبصرہ بھیجیں