مردانہ صحت کی اہم معلومات

مردانہ صحت کے تحفظ کے لئے اچھی خوراک اور مثبت طرز زندگی کے ساتھ مخصوص اعضاءکا باقاعدہ معائنہ بھی ازحد ضروری ہے تاکہ مسائل کو سنگین ہونے سے پہلے ہی پکڑا اور ختم کیا جاسکے۔مردانہ صحت کے ماہرین کا کہنا ہے کہ ہر ماہ کم از کم ایک دفعہ خصیوں کا تفصیلی معائنہ ضرور کریں۔ مردانہ کینسر سے متعلق ویب سائٹ  کے مطابق معائنے کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ غسل کے بعد انگوٹھے اور انگلی کی مدد سے خصیوں کی جلد کو اچھی طرح ٹٹولیں۔ اگر آپ کو سوجن، درد یا خصیوں کے سائز میں غیر معمولی تبدیلی نظر آئے تو یہ پریشانی کی علامت ہوسکتی ہے۔ چند اہم مسائل درج ذیل ہوسکتے ہیں:ورماگر آپ کو نرم گلٹی محسوس ہو جس کو دبایاجاسکتا ہو اور اس کے اندر کسی مائع کی موجودگی بھی محسوس ہو تو یہ خصیوں کے ورم کی نشانی ہے۔ عام طور پر ان گلٹیوں کو سوجن یا درد کی غیر موجودگی میں بے ضرر سمجھا جاتا ہے لیکن ان کے متعلق ڈاکٹر سے مشورہ کرنا ضروری ہے۔ ۔جاری ہے۔


خصیوں کا کینسراس کی متعدد علامات میں خصیے کے سامنے یا ایک طرف سخت گلٹی نمودار ہونا، ایک خصیے کا سوجنا یا بڑا ہوجانا، خصیوں میں سختی کا پیدا ہوجانا یا درد محسوس ہونا شامل ہیں۔ اس کے علاوہ خصیوں میں بھاری پن محسوس ہونا یا پیٹ کے زیریں حصے میں ہلکا درد مستقل محسوس ہونا بھی خصیوں کے کینسر کی علامات میں شامل ہیں۔ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر آپ کے والد اس بیماری کا شکار رہے ہیں تو آپ میں اس کا خدشہ چار گنابڑھ سکتا ہے جبکہ اگر آپ کا بھائی اس مسئلے کا شکار رہا ہے تو آپ میں اس کا خدشہ آٹھ گنا بڑھ جائے گا۔ اسی طرح بانجھ پن کے شکار مردوں میں بھی خصیوں کے کینسر کا خدشہ تین گنا زیادہ پایا جاتا ہے۔ سخت گلٹی محسوس ہونے کی صورت میں فوری طور پر ڈاکٹر سے رابطہ کریں۔ ۔جاری ہے۔

خصیے میں بَل پڑنایہ مسئلہ عموماً بلوغت کے قریب نوعمر لڑکوں کو پیش آسکتا ہے۔ کھیل کود یا ورزش کے دوران پیٹ سے خصیوں کی طرف آنے والے عضلات میں بل پڑسکتا ہے جس کی وجہ سے خصیے کو خون کی فراہمی بند ہوجاتی ہے۔ اس دوران شدید درد اور کھنچاﺅ کی کیفیت محسوس ہوتی ہے۔ اگر خصیے کو خون کی فراہمی چھ گھنٹے تک معطل رہے تو اس کی موت ہوجاتی ہے اور اسے آپریشن کرکے جسم سے علیحدہ کرنا پڑتا ہے۔ یہ ایک ایمرجنسی کیفیت ہے لہٰذا بغیر کوئی لمحہ ضائع کئے ڈاکٹر سے رابطہ کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں