”ڈاکوﺅں نے گھر میں 4 گھنٹے گزارے اور خواتین کی ویڈیو بنائی تاکہ۔۔۔“ اسلام آباد میں ڈکیتی کی انوکھی ترین واردات، ڈاکو لوٹ مار کرنے کے علاوہ خواتین کی ویڈیو بناتے رہے، ایسا کیوں کیا؟ جان کر آپ کے بھی ہوش اڑ جائیں گے

پاکستان آن لائن) وفاقی دارالحکومت کی پولیس ڈاکوﺅں کے ایسے گروہ کی تلاش کر رہی ہے جنہوں نے ایک گھر میں ڈکیتی کی واردات کے دوران خواتین کو باندھ کر ان کی ویڈیو بھی بنالی اور واردات سے متعلق کسی کو خبر دینے کے نتیجے میں ویڈیوز سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کرنے کی دھمکی دیتے ہوئے فرار ہو گئے۔سلام آباد کے علاقے غوری ٹاﺅن کے رہائشی متاثرہ خاندان کے مطابق 18 اپریل کی رات کو 4 مسلح افراد ان کے گھر میں گھس آئے ۔جاری ہے ۔

......
loading...

اور مبینہ طور پر گھر کے افراد کو اسلحہ کے زور پر یرغمال بنا لیا اور انہیں باندھ دیا۔ ڈاکوﺅں نے 4 گھنٹے تک باآسانی لوٹ مار کی اور اس دوران 5 لاکھ 10 ہزار روپے نقد رقم اور 4 موبائل فون اپنے قبضے میں لے لئے۔ ڈاکوﺅں نے مبینہ طور پر گھر کے افراد کو تشدد کا نشانہ بنایا اور خواتین کی ویڈیو بنائی اور دھمکی دی کہ اگر انہوں نے اس واردارت سے متعلق کسی کو بھی کچھ بتایا تو وہ یہ ویڈیوز انٹرنیٹ پر ڈال دیں گے۔ ڈاکوﺅں کی دھمکی کے نتیجے میں گھر والوں نے واقعی فوری طور پر پولیس کو بھی اس واردات کی اطلاع نہ دی ۔جاری ہے ۔

تاہم واردات کے 10 روز بعد 28 اپریل کو متاثرہ خاندان نے کورال پولیس سٹیشن میں شکایت درج کرائی۔کورال پولیس نے ڈکیتی کا مقدمہ درج کر کے 4 نامعلوم ڈاکوﺅں کی تلاش شروع کر دی ہے تاہم ابھی تک اس مقدمے میں کوئی بھی گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔