عمرہ ادا کرنے گئے شہری کے مدینہ میں گم ہونے والے 16ہزار ریال اسے مکہ میں واپس مل گئے، لیکن کیسے؟ جان کر آپ بھی سبحان اللہ کہنے پر مجبورہوجائیں گے

رمضان کے مبارک مہینے کے دوران مکہ کے مقدس شہر میں نیکی اور دیانتداری کی ایک ایسی خوبصورت مثال سامنے آئی ہے کہ جو سنتا ہے بے اختیار سبحان اللہ کہہ اٹھتا ہے۔ سعودی گزٹ کی رپورٹ کے مطابق کویتی شہری زید الخبار عمرہ کی ادائیگی کیلئے سعودی عرب آئے تھے لیکن جب وہ مدینہ میں تھے تو اپنی بھاری رقم گم کر بیٹھے۔ زید الخبار نے اس واقعہ کے متعلق بتایا ©©” جب میں مدینہ سے روانہ ہو رہا تھا تو میں نے وہاں ایک شخص کو احرام باندھنے میں مشکل کا سامنا کرتے دیکھا تو اس کی مدد کیلئے رک گیا۔ میں نے اپنا سامان نیچے رکھا اور اس شخص کی مدد کرنے لگا لیکن پھر جلدی میں اپنا سامان وہیں چھوڑ کر ایک ٹیکسی کی جانب بڑھ گیا۔۔جاری ہے ۔

......
loading...

میرے سامان میں کچھ کپڑے ، پرس اور ایک لفافہ تھا جس کے اندر 16 ہزار سعودی ریال (تقریباً ساڑھے 4 لاکھ پاکستانی روپے) تھے۔ جب میں مکہ پہنچا اور ٹیکسی کا کرایہ ادا کرنا چاہا تب مجھے معلوم ہوا کہ میں اپنا سامان مدینہ میں ہی بھول آیا تھا ۔ٹیکسی ڈرائیور نے مدینہ میں اپنے بھائی سے رابطہ کیا اور سامان ڈھونڈنے کو کہا۔ اس کے بھائی نے کچھ کوشش کے بعد میرے کپڑے تو ڈھونڈ لیے البتہ رقم کا کچھ پتہ نہ چل سکا۔ میں پریشانی کے عالم میں مکہ میں موجود تھا اور کھوئی ہوئی اشیاءسے متعلقہ مقامی دفتر کو اطلاع دینے کے بعد انتظار کے سوا کچھ بھی نہیں کر سکتا تھا۔ اگلے دن مجھے مقامی دفتر سے فون آیا اور مجھے بتایا گیا کہ میری کھوئی ہوئی رقم ان کے پاس موجود ہے۔ میں فوری طور پر دفتر پہنچا۔جاری ہے ۔

اور یہ دیکھ کر مجھے اپنی آنکھوں پر یقین نہ آیا کہ لفافے کے اندر میری پوری رقم موجود تھی ۔ مقدس مقام پر حاضری کا موقع ملنے پر انسان پہلے ہی جذبات سے مغلوب ہوتا ہے لیکن اس واقعے نے مجھے مزید جذباتی کر دیا۔ میں اپنی کیفیت کو الفاظ میں بیان نہیں کر سکتا۔ “