اپنی بیوی کے ہوتے ہوئے مرد باہر غیر محرم عورتوں کی جانب کیوں راغب ہوتے ہیں ؟ بیویوں کے لئے اہم ترین

زنااور بدکاری کو دنیا کے تمام بڑے مذاہب نے گناہ اورپاپ قرار دیا ہے اسکے باوجود انسان اس گناہ سے اپنی روح کو پراگندہ کرتا رہتاہے۔خاص طور پر شادی شدہ مرد اپنی بیویوں کے علاوہ پرائی عورتوں سے جنسی تعلقات استوار کرنے سے گریز نہیں کرتے ۔۔جاری ہے۔

ان میں سے بہت سے مرد ایسے بھی ہوتے ہیں جو جسم فروش عورتوں کے رسیا ہوتے ہیں ۔اس حوالے سے جب جنسی امور کے ایک ماہر معالج سے پوچھا گیا کہ مرد اپنی بیوی کے ہوتے ہوئے جسم فروش عورتوں اور دیگر عورتوں سے جنسی تعلقات کیوں رکھتے ہیں تو ان کا کہنا تھا کہ شادی اور بچوں کے بعد انکی بیویاں انکو توجہ نہیں دیتیں جس کی وجہ سے وہ حرام کاری کرتے ہیں ۔یہ انہیں بھی معلوم ہے کہ یہ سراسر گناہ ہے لیکن وہ پھر بھی باز نہیں رہتے ۔ایسے مردوں کاکہنا ہے کہ انکی بیویاں ہر وقت تھکی نظر آتی ہیں۔جاری ہے۔

جبکہ پرائی عورتوں کی ترغیبات سے ان کا من موہا جاتا ہے۔کیونکہ جنسی تعلق کوئی نوکری نہین ہے بلکہ یہ ضرورت کے ساتھ آسودگی کا باعث ہونا چاہئے۔بیویوں کے ساتھ رومانس کیا جائے تو وہ پریشان ہوجاتیں یا ناراض ہوکر شوہر کو آوارہ مزاج کہنا شروع کردیتی ہیں۔ماہر جنسیات کا کہنا ہے کہ ایسا بھی نہیں کہ ہر عورت اپنے شوہر سے جنسی میلاپ کے دوران تھکی ہوئی اور تنک مزاج نظر آئے۔البتہ بعض مردوں کی فطرت ایسی ہوتی ہے کہ وہ زناو بدکاری سے باز نہیں رہتے۔

کیٹاگری میں : Viral