وزن کم کرنا چاہتے ہیں تو املی اس طریقے سے استعمال کریں

انڈونیشیا میں جب گرمی جوبن پر ہوتو یہاں املی کی چائے پینے کا رواج ہے۔یہ چاہئے املی اور لیموں سے بنتی ہے اور اسے یخ کرکے پیا جاتا ہے ۔ہمارے ہاں بھی گرمیوں میں املی کا شربت پینے کا رواج ہے لیکن طبی افادیت سے واقف نہ ہونے سے املی کا استعمال محدود ہوکر رہ گیا ہے۔۔جاری ہے

حالانکہ بہت سے بڑے ملکوں میں املی کی آئس کریم اور قہوے مشہورہوچکے ہیں اور نباتاتی غذاوں سے محبت کرنے والے اپنی اچھی صحت کے لئے ایسی خوراک و مشروبات کو ترجیح دے رہے ہیں۔ہمارے ہاں خوف یہ پایا جاتا ہے کہ املی کھانے سے گلا خراب ہوجاتا ہے۔بات درست بھی ہے،اگر گلا پہلے سے خراب ہویا املی ناقص ہوتو یہ مسئلہ ہوسکتا ہے۔زیادہ تر املی میں دوسری چیزوں کی آمیزش اسکو تلخ اور مضر بنادیتی ہے ۔ پرانے زمانے سے املی کا استعمال ہاضمہ کی اصلاح کے لئے ہوتا آ رہا ہے۔ املی میں معدنی‘ اور حیاتینی اجزاءبکثرت پائے جاتے ہیں۔ کچی املی ثقیل اور فاسد ہوتی ہے۔ یہ سودا کو کم کرتی اور صفرا و بلغم کو بڑھاتی ہے۔

......
loading...

پکی املی مسہل‘ بھوک آور اور ہاضمہ درست کرتی ہے۔ خشک املی مفرح پیاس کی شدت روکتی‘ مقوی اور بخار کی حدت کم کرتی ہے۔ املی کے پتوں کے جوشاندہ کی تاثیر قابض اور دافع یرقان ہوتی ہے۔جدید طبی تحقیقات کے مطابق املی بلڈپریشر اور کولیسٹرول کو اعتدال پر لانے میں بہترین غذا ثابت ہوئی ہے۔تحقیقات کے مطابق اس میں شامل اجزا شریانوں سے چربیلے مادے خارج کرتے ہیں جبکہ املی میں فولاد کی مخصوص مقدار دوران خون کو بہتر بناتی ہے اور اس سے خون کے نئے سیلز بنتے ہیں جو خون میں آکسیجن کا لیول بڑھانے میں عمدہ مدد فراہم کرتے ہیں ۔جن لوگوں میں خون کی قلت ہو ان کے لئے املی کا شربت ایک مفید مشروب ہے ۔۔جاری ہے

خون میں کمی کی وجہ سے جسمانی تھکاوٹ جیسے مسائل جنم لیتے ہیں جواملی سے دور کئے جاسکتے ہیں۔املی میں وٹامن بی کمپلیکس تھایامین ہوتا ہے جو اعصابی نظام کو تقویت دیتا ہے۔ ایسے افراد جن کا وزن زیادہ بڑھتا ہو انہیں اپنے ماہر غذایات کے مشورہ سے املی کو روزمرہ استعمال میں رکھنا چاہئے،کیونکہ املی میں ایک ایسا انزائم موجود ہ ہے جو آنتوں میں اکٹھی ہونے والی چربی کو زائل کردیتا ہے۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول کریں ۔↓↓↓۔