ایک کسان ایک بیکری والے کو روز مکھن فروخت کیا کرتا تھا ایک ایک دن

ایک کسان ایک بیکری والے کو ایک کلو مکھن فروخت کیا کرتا تھا۔ایک دن بیکری والے نے سوچا کہ مکھن کا وزن کیا جاۓ تا کہ وہ یہ جان سکے کہ اسے ایک کلو وزن کے برابر مکھن ملتا بھی ہے کہ نہیں !۔جاری ہے۔


وزن کرنے کے بعد اسے معلوم ہوا کہ مکھن کا وزن ایک کلو سے کم تھا۔اس پر اسے غصہ آیا اور وہ کسان کو لے کر قاضی کے پاس چلا گیا،
قاضی نے پوچھا کہ کیا وہ مکھن تولنے کے لئے ترازو کا استعمال کرتا ہے ؟کسان نے جواب دیا جناب میں ایک سادہ انسان ہوں میرے پاس کوٸ ترازو نہیں ہاں البتہ ایک پیمانہ ہے۔جاری ہے۔

......
loading...

!قاضی نے سوال کیا کہ اگر تمہارے پاس ترازو نہیں تو تم مکھن کا وزن کیسے کرتے ہو ؟کسان نے جواب دیا جب سے بیکری والے نے مجھ سے مکھن خریدنا شروع کیا ہے۔جاری ہے۔

میں اس سے ایک کلو وزن کی دہی خرید لیتا ہوں، اور اسی دہی کے وزن کے برابر مکھن دے دیتا ہوں۔اس معاملہ میں قصور میرا نہیں بیکری والے کا ہے ۔۔۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔