بیوی رومانٹک ہوکر شوہر سے کہنے لگی اگر میں مرجائوں تو کیا تم پھر شادی کروگے پھر کیا ہوا

کچھ لوگوں کا رومانس دکھ بھری باتوں کے بغیر پورا نہیں ہوتا۔ شریک حیات سے پوچھنا کہ ”میرے مرنے کے بعد تم کیا کرو گے؟ کیا تم دوسری شادی کر لو گے؟“ بھی ایک ایسی ہی مثال ہے۔ ایسے سوالوں کا یقینا کوئی خوشگوار جواب نہیں ہو سکتا، اور بعض اوقات تو کوئی صدمہ خیز انکشاف بھی سامنے آ سکتا ہے۔ ایک میاں بیوی کی گفتگو کا مندرجہ ذیل احوال ایک ایسی ہی دلچسپ مثال ہے۔۔جاری ہے۔


(خاتون اور اس کاشوہر بیڈ پر بیٹھے خاموشی سے مطالعہ کررہے تھے۔ اچانک خاتون نے کتاب سے نظر اُٹھائی اور اپنے خاوند کے ساتھ کچھ یوں گویا ہوئی:)خاتون: اگر میں مرگئی تو تم کیا کرو گے؟ کیا تم دوبارہ شادی کرلوگے؟ مرد: ہرگز نہیں۔ خاتون:کیوں نہیں؟کیا تمہیں شادی کرنا اچھا نہیں لگتا؟ خاوند: اچھا تو لگتا ہے۔ خاتون: تو پھر تم دوبارہ شادی کیوں نہیں کرو گے؟ خاوند:اچھا بھئی، میں دوبارہ شادی کرلوں گا۔۔جاری ہے۔

......
loading...


خاتون (دکھ بھرے لہجے میں): کیا واقعی تم کرلوگے؟ کیا تمہاری دلہن ہمارے اسی گھر میں رہے گی؟خاوند:ہاں، یہ بہت اچھا گھر ہے۔خاتون : کیا تم اس کے ساتھ ہمارے اسی بیڈ پر سویا کرو گے؟خاوند: تو اور میں کہاں سوﺅں گا؟خاتون: کیا تم اسے میری گاڑی بھی چلانے دو گے؟خاوند:ہاں شایدخاتون: کیا تم اکٹھے گالف کھیلنے بھی جایا کرو گے؟خاوند:ہاںخاتون: کیا وہ میری گالف سٹک سے گالف کھیلا کرے گی؟
خاوند (بے دھیانی میں): نہیں وہ بائیں ہاتھ سے کھیلتی ہے۔۔جاری ہے۔


یہ جواب سن کر خاتون کے تو چودہ طبق روشن ہو گئے۔ وہ تو محض رومانس جھاڑ رہی تھی مگر خاوند کے دل میں چھپی بات ظاہر ہو گئی۔ بس پھر کیا تھا، ایسا جھگڑا شروع ہو اکہ بات طلاق پر ہی جا کر رکی۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔