وہ لڑکا مجھے سے چھپ چھپ کر ملتا تھا لڑکی نے اپنی آپ بیتی بتا دی

کسی مرد کی سرعام کوئی عورت پٹائی کر دے تو وہ غصے سے آگ بگولا ہو جائے گا لیکن برطانیہ کے شہر پلیمتھ کی ایک خاتون کو مرد اس کام کے عوض لاکھوں روپے دیتے ہیں۔

 

اس خاتون کا نام میگپی ہے جو پیشے کے اعتبار سے سیکس ورکرہے اور جسمانی و نفسیاتی تشدد کے ذریعے مردوں کو جنسی تسکین دیتی ہے۔ وہ مردوں کو اذیت دینے کے لیے کئی طرح کے ہتھیار استعمال کرتی ہے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق33سالہ میگپی ، جو مارگریٹ کے نام سے بھی معروف ہے، کا کہنا ہے کہ ”میرے گھر آنے والے مرد جس ہتھیار سے تکلیف پانا چاہتے ہیں، یہ ان کا انتخاب ہوتا ہے۔

 

 

میرے پاس کوڑے، لکڑی کے بلے، چھڑیاں، درے اور دیگر اسی نوع کی چیزیں ہیں جن سے میں مردوں کو مارتی ہوں۔ اس کے علاوہ مرد اگر چاہیں تو میں انہیں برقی کرنٹ لگا کر بھی تشدد کا نشانہ بنا سکتی ہوں۔ میرے پاس مردوں کو کرنٹ لگانے والی مشین بھی موجود ہے۔“میگپی کا مزید کہنا تھا کہ ”مرد میری خدمات اس لیے حاصل نہیں کرتے کہ وہ مجھ سے جنسی لذت حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ وہ اس لیے میرے پاس آتے ہیں کہ میں مختلف طریقوں سے مردوں کو ایذارسانی کے ذریعے جنسی تسکین دینے کی ماہر ہوں۔ میرے پاس آنے والے

......
loading...

 

 

زیادہ تر مرد کولہوں پر تشدد کروانا پسند کرتے ہیں۔ وہ چاہتے ہیں کہ میں ان کا میک اپ کروں، انہیں خواتین والے ملبوسات پہناﺅں اور ان کے ساتھ اس طرح کا سلوک کروں گویا وہ عورتیں ہوں۔ بہت سے مرد یہ بھی چاہتے ہیں کہ میں انہیں گالیاں دوں اور زبان سے ان کی توہین کروں۔ “ میگپی بنیادی طور پر امریکی شہری ہے۔ چار سال قبل وہ ٹورازم بزنس سے وابستہ تھی اور ضروریات زندگی کے لیے تگ و دو کر رہی تھی۔

 

پھر اس نے اپنے شوق کو پیشہ بنانے کا فیصلہ کیا۔ وہ برطانیہ منتقل ہو گئی اور مردوں کی پٹائی کی ماہر بن گئی۔ اب امیر مرد اس کے پاس آتے ہیں اور وقتی شوق پورا کرنے کے عوض اسے لاکھوں روپے دیتے ہیں۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔