کریم کے ڈرائیور کی پاکستانی لڑکی کے ساتھ بُری حرکتیں

کریم اور اوبر جیسی ٹیکسی سروس آنے سے جہاں لوگوں کو سہولت میسر آئی ہے وہیں ان سروسز کے ڈرائیورز کی تربیت نہ ہونے کے باعث مسافروں کو بعض اوقات زندگی اپنی زندگی ہاتھوں سے کھسکتی محسوس ہوتی ہے۔

 

ایسی ہی ایک متاثرہ خاتون جب کریم کی ٹیکسی میں بیٹھی تو وہ یہ دیکھ کر حیران رہ گئی کہ ڈرائیور اپنی محبوبہ کے ساتھ ویڈیو کال میں مصروف ہے اور اسے کپڑے اتارنے کا کہہ رہا ہے۔علینہ میمن نامی لڑکی نے فیس بک پر بتایا کہ اس نے دفتر سے گھر جانے کیلئے کریم کی ٹیکسی منگوائی۔ کریم والوں نے کیپٹن فیصل نواز نامی ڈرائیور کو بھجوایا جو پہلے سے ہی اپنی محبوبہ کے ساتھ ویڈیو کال میں مصروف تھا۔ ’ میں سمجھ رہی تھی

 

کہ کپتان صاحب آڈیو کال کر رہے ہیں لیکن مجھے اس وقت حیرت کا جھٹکا لگا جب موصوف نے اپنی گرل فرینڈ سے کہا کہ ویڈیو کال پر ہی اس کے سامنے کپڑے تبدیل کرے‘۔لڑکی نے بتایا کہ جب ڈرائیور کی محبوبہ نے کپڑے تبدیل کرنا شروع کیے تو وہ مستی میں آگیا اور لا پرواہی کے ساتھ گاڑی چلانا شروع کردی ، اس دوران وہ ٹک ٹک دیدم دم نہ کشیدم کی عملی تصویر بن چکا تھا۔لڑکی نے مزید بتایا کہ جب وہ پنجاب چورنگی والے فلائی اوور پر پہنچے تو کپتان صاحب نے دونوں ہاتھ سٹیئرنگ سے اٹھا لیے ،

......
loading...

 

 

ایک ہاتھ میں اس نے ویڈیو کال والا موبائل فون پکڑا ہوا تھا جبکہ دوسرے ہاتھ میں وہ اپنی محبوبہ کو دوسرا موبائل فون دکھا رہا تھا۔ ’ یہی وہ لمحہ تھا جب میری چیخ نکل گئی اور میں نے ڈرائیور کو دھیان سے گاڑی چلانے کا کہا ، جس کے بعد اس نے توجہ سے گاڑی چلانا شروع کی‘۔علینہ میمن نے کہا کہ وہ نہیں چاہتی کہ لوگ کریم میں سفر کرنا چھوڑ دیں لیکن کریم ٹیکسی سروس والوں کو چاہیے کہ وہ اپنے ڈرائیورز کو دورانِ ڈرائیونگ موبائل فون استعمال نہ کرنے کی ٹریننگ دیں،

 

کیونکہ فلائی اوور پر جب کیپٹن فیصل نواز نے دونوں ہاتھ چھوڑے تو سیکنڈ کے ہزار ویں حصے میں کچھ بھی ہو سکتا تھا۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔