ایک لڑکے کے ماں باپ بیٹے کی شادی امیرلڑکی سے کرنا چاہتے تھے لیکن لڑکا

ایک بہت امیر آدمی کا ایک ہی بیٹا تھا، جوان اور خوبصورت، بہت محنتی تھا اور لائق ہونہار لڑکا تھا۔ جب وہ اپنے کاروبار کو سمجھ گیا اور سب کام خود سنبھالنے لگا تو اس کے ماں باپ نے سوچا کہ ہمارا بیٹا اتنا زبردست ہے کیوں نہ اس کے لیے اب کوئی لڑکی تلاش کی جائے اور اس کی شادی کر دیں۔۔جاری ہے۔

انھوں نے اپنی مرضی کی ایک لڑکی کا فوٹو لڑکے کو دکھایا اور اس سے پوچھا کہ بتاؤ اس سے شادی کرو گے یا اور کوئی تلاش کریں؟ وہ اس کے لیے شہر کے بڑے سے بڑے کسی بھی بزنس مین کی لڑکی کا ہاتھ مانگ سکتے تھے۔ لڑکا بولا کہ نہیں نہ تو یہ فوٹو والی اور نہ ہی کوئی بھی اور امیر لڑکی۔ امیر لڑکیاں خودسر ہوتی ہیں، ضدی اور بدمزاض ہوتی ہیں، مجھے توہیں، مجھے تو ایک محنتی اور پر مسرت لڑکی چاہیے ہے تاکہ ساری عمر سکون سے گزر جائے۔۔جاری ہے۔

......
loading...

اس کے ماں باپ امیر گھرانے کے تھے اور ساری عمر انھوں نے پیسے جوڑنے میں صرف کی تھی وہ بہت پریشان ہوئے۔ انھوں نے تو سوچا تھا کہ شہر کے سب سے بڑے کسی خاندان سے ناتا جوڑیں گے اور اس طرح ہمارا کاروبار بھی مزید چمک جائے گا لیکن ادھر ان کا لڑکا عجیب بہکی بہکی باتیں کرنے لگ پڑا تھا، آخر کار لڑکے نے ایک دن ان کو بتا دیا کہ جو میڈ گھر میں رکھی ہوئی ہے مجھے وہی پسند ہے اور میں اسی سے شادی کرنا چاہتا ہوں، سارا دن کام کاج میں لگی رہتی ہے اور کتنی خو ش اخلاق ہے۔ ماں باپ کے تو پاؤں تلے زمین نکل گئی، اتنا ہونہار معروف، مشہور بیٹا اور ایک نوکرانی سے شادی کرنے کا خواہاں ہو گیا۔۔جاری ہے۔

طیش میں آکر ماں باپ نے اس لونڈی کو گھر سے نکال دیا۔ لڑکا جب گھر واپس آیا اور یو سنا تو سب کاروبار کام چھوڑ کر چلا گیا۔ اس نے اسی لڑکی سے شادی بھی کر لی۔ ایک دن اس کی ماں کا صبر جواب دے گیا، بیٹے کی یاد نے دل میں انگڑائی لی تو اٹھی اور اس کے گھر جا پہنچی، دیکھا تو گھر میں کچھ بھی نہ تھا۔ حیران ہوئی اور اپنے بیٹے سے پوچھا: کیا ہو گیا ہے تمہیں، اپنا گھر کیوں نہیں رہتے جہاں فریج ہر وقت کیک اور جوسز سے بھرا رہتا ہے، ادھر بمشکل کھانے کو کچھ کام کا ہے، سارا دن ادھر بیٹھے رہتے ہو۔ کیوں ایسے کر رہے ہو۔۔جاری ہے۔

لڑکے نے جواب دیا کہ ہم دونوں ایک دوسرے سے بہت پیار کرتے ہیں اور مجھے ادھر سکون ملتا ہے، امی گھر وہ نہیں ہوتا جدھر سب آسائشیں ہوں، گھر وہ ہوتا ہے جدھر پیار محبت اور سکون ہوتا ہے۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔