دعوت اسلامی والوں کی اسپیشل مدنی عینک، تمام مسلمان بھائی ضرور پہنیں، جب کسی عورت کے پاس جائیں تو میٹھے بھائی یہ اسپیشل عینک پہن لیں

دعوت اسلامی والوں نے میٹھے میٹھے مسلمان بھائیوں کے لیے ایسی عینک ایجاد کی ہے جو نگاہیں نیچی رکھنے میں بہت مددگار ثابت ہوئی ہے. جب بھی کسی عورت کے پاس جائیں تو یہ عینک پہن لیں.

عینک کا اوپر والا شیشہ کالا ہے جس سے آپکو عورت کی شکل اور جسم بلکل بھی نظر نہیں آئیگا البتہ نیچے فرش ضرور نظر آئیگا. یہ عینک کس طرح ایجاد ہوئی؟ تفصیل پڑھیںمیٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!نگاہیں نیچی رکھنے کی عادت بنانے کے لئے قفلِ مدینہ کے عینک کا استعمال بے حد مُفید ہے، مَدَنی انعامات کے تاجدار ،محبوبِ عطّار حاجی زم زم رضاعطاری عَلَیْہِ رَحمَۃُ اللہِ الباری گناہوں سے آنکھوں کی حفاظت کے لئے قفلِ مدینہ عینک کا کثرت سے استعمال کرتے تھے حتّٰی کہ دورانِ علالت اَسپتال میں بھی قفلِ مدینہ عینک استعمال کیا کرتے تھے ، اس کے علاوہ دوسرا عینک لگانے کا معمول ہی نہیں تھا۔

 

......
loading...

یہ عینک حاجی زم زم رضا عطاری عَلَیْہِ رَحمَۃُ اللہِ الباری نے پہلی مرتبہ کب اور کیسے لگائی؟ اسکے بارے میں انہوں نے مَدَنی چینل کے سلسلے ’’کھلے آنکھ صلِّ علیٰ کہتے کہتے‘‘ میں کچھ اس طرح بتایا تھا کہ جب شروع شروع میں مَدَنی انعامات آئے تھے تو ان میں قفلِ مدینہ کا عینک شامل نہیں تھا۔ایک دَفْعہ جب رُکن شوریٰ حاجی محمد علی عطاری باب المدینہ کراچی سے واپَس آئے تو میں ان کے پاس حاضِر ہوا ۔ یہ اس وَقْت میڈیکل اسٹور پر بیٹھے ہوئے تھے۔انہوں نے ایک عینک پہنا ہو ا تھا جس کے اوپری حصے کو پین کی سیاہی سے بلیک کردیا تھا تاکہ اوپر سے نظر نہ آئے ۔ جب میں نے دیکھا تو پوچھاکہ یہ آپ نے کیا پہنا ہوا ہے؟کہنے لگے کہ اس سے نظریں جھکانے میں مدد ملتی ہے۔میں نے کہا :لوگ مذاق بنائیں گے،نظریں تو ویسے بھی جھکا سکتے ہیں۔

 

انہوں نے کہا کہ ایک اسلامی بھائی ایسا ہی عینک پہنے ہوئے تھے تو امیر اہل سنت دامت برکاتہم العالیہ نے بہت پسند فرمایا تھا۔امیر ِاہلِ سنّت دامت برکاتہم العالیہکی پسند کا سن کر میرا ذِہن بنا کہ یہ کام کرنا چاہیے۔وہ عینک انہوں نے مجھے تحفے میں دے دی۔ میں نے اسے اوپر سے گرینڈ کروالیا تھا. تقریبا پورا دن میں اسے پہنتا تھا۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔