وہ ایک دوائی جو ہم سب اکثر کھاتے ہیں مردوں کو بانجھ بنا سکتی ہے، تازہ تحقیق میں سائنسدانوں نے وارننگ جاری کردی

آئبروفن کی گولیاں ہر گھر میں موجود ہوتی ہیں اور لوگ معمولی درد کی صورت میں ان کا بے دریغ استعمال کرتے ہیں لیکن اب ڈنمارک کے سائنسدانوں نے مردوں کے لیے ان گولیوں کا ایسا نقصان بتا دیا ہے۔جاری ہے

کہ جان کر مرد انہیں ہاتھ بھی نہیں لگائیں گے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے تحقیق میں بتایا ہے کہ ”آئبروفن کی گولیاں مردانہ قوت اور مردوں کی افزائش نسل کی صلاحیت کے لیے زہرقاتل ہیں۔ روزانہ آئبروفن کی 6گولیاں کھانے سے مرد کے جنسی ہارمونز پر انتہائی منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں، اس کی جنسی خواہش مر جاتی ہے اور ہارمونز کی مقدار اس قدر کم ہو جاتی ہے کہ وہ اولاد پیدا کرنے کے قابل نہیں رہتا۔ اس کے علاوہ اس کے پٹھے اس سے شدید متاثر ہوتا ہے اور اسے ڈپریشن لاحق ہو جاتی ہے۔“۔جاری ہے

......
loading...


یونیورسٹی آف کوپن ہیگن کے سائنسدانوں نے اس تحقیق میں 18سے 35سال کے مردوں پر تجربات کیے۔ ماہرین نے ان مردوں میں سے ایک گروپ کوآئبروفن کی روزانہ 300ملی گرام خوراک دی اور چار ہفتے بعد ان کی جنسی صلاحیت اور ٹیسٹاسٹرون کی پیداوار کے ٹیسٹ کیے، جن میں ثابت ہوا کہ اس گروپ کے مردوں کی جنسی صلاحیت دوسرے گروپ کی نسبت کئی گنا کم ہو گئی تھی۔ان میں ٹیسٹاسٹرون کی مقدار بھی بہت کم رہ گئی اور یہ لوگ ڈپریشن کا شکار ہونے لگے تھے۔۔جاری ہے

تاہم جب انہوں نے آئبروفن کا استعمال ترک کیا تو دو ہفتے میں یہ دوبارہ صحت مند ہو گئے لیکن سائنسدانوں نے مردوں کو متنبہ کیا کہ اس گولی کا طویل عرصے تک استعمال انہیں ہمیشہ کے لیے جنسی طور پر کمزور اور افزائش نسل کی صلاحیت سے محروم کر سکتا ہے

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔