حاملہ ہونے سے پہلے جن خواتین کا اس چیز سے سامنا ہوا ان کے بچوں میں پیدائشی نقائص کا خطرہ بہت زیادہ ہوتا ہے سائنسدانوں نے سب کو خبردار کردیا جانئے

ماحولیاتی آلودگی انسانوں کے لیے انتہائی خطرناک ثابت ہوتی ہے اور اب سائنسدانوں نے اس کا ایک ایسا نقصان بتا دیا ہے کہ سن کر پاکستانی پریشان ہو جائیں گے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق امریکی سائنسدانوں نے جدید تحقیق کے بعد بتایا ہے کہ۔جاری ہے

”حاملہ ہونے سے پہلے جو خواتین آلودہ فضاءمیں رہیں ان کے ہاں مختلف معذوریوں کے شکار بچے پیدا ہونے کا امکان بہت زیادہ ہو جاتا ہے۔“یونیورسٹی آف سنسیناٹی کے سائنسدانوں نے اس تحقیق میں ریاست اوہائیو میں 2006ءسے 2010ءکے درمیان پیدا ہونے والے 2لاکھ ۔ہزار بچوں کی صحت اور ان کی ماﺅں کی جائے ۔جاری ہے

......
loading...

رہائش پر فضائی آلودگی کے تناسب کا تجزیہ کرکے نتائج مرتب کیےجن میں انہوں نے بتایا کہ ”صاف ہوا میں 0.01ملی گرام فی کیوبک میٹر آلودگی خواتین کے ہاں معذور بچے پیداہونے کے امکان میں 19فیصد اضافہ کرتی ہے۔ایسی خواتین کے ہاں پیدا ہونے والے بچوں کوسب سے زیادہ تالو کے نقائص،۔جاری ہے

ہونٹوں کے پھٹنے اور معدے کے حد سے زیادہ بڑے اور باہر نکلے ہونے جیسی معذوریاں لاحق ہوتی ہیں۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔