وہ فیس بک گروپ جس نے معصوم زینب کے معاملے کا مذاق اڑانے میں کوئی کسرنہ چھوڑی ایسی ایسی تصاویر شئیر کریدن کہ ہر پاکستانی کا خون کھول اُٹھا دیکھ کر آپ غصے سے آگ بگولہ ہوجائیں گے

زینب زیادتی قتل کیس کے حوالے سے خفیہ اداروں اور ڈی پی او نے تفتیش کا دائرہ وسیع کرتے ہوئے کھوجیوں کی مدد سے سرحدی علاقوں سے 18 مشکوک افراد کو حراست میں لے کر تفتیش کے لئے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا۔۔جاری ہے

روزنامہ دنیا کے مطابق ڈی پی او قصور زاہد مروت اور خفیہ اداروں کی ٹیم نے سی سی ٹی وی فوٹیج ودیگر اہم شواہد کے پیش نظر مختلف مقامات سے بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب کو سات افراد کو حراست میں لیا، تفتیش کے بعد ڈی پی او نے سپیشل ٹیم کے ہمراہ سرحدی علاقوں میں بھی خفیہ آپریشن کیا جہاں سے مزید مشکوک افراد کو گرفتار کیا گیا۔۔جاری ہے

......
loading...

اخبار کے مطابق پولیس نے زیر حراست مشکوک افراد کے فنگرپرنٹس کے علاوہ ان کے ڈی این اے ٹیسٹ بھی کروائے اور تین افراد کو خفیہ مقام پر لے جاکر جھوٹ پکڑنے والی مشین (پولی گرافک) سے تفتیش کی گئی۔ اخبار کا کہنا ہے کہ جونامعلوم شخص سی سی ٹی وی فوٹیج میں زینب کو لے جاتے ہوئے دکھائی دیا۔جاری ہے

وہ ابھی تک گرفتار نہیں ہوسکا۔ زینب کو جن راستوں سے لے جایا گای وہاں پر کھوجیوں کی بھی مدد لی گئی اور سراغ رساں کتوں کو بھی بلایا گیا۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔