وہ دولہا جس نے اپنی جان دے کر ڈھیروں پاکستانیوں کو بچالیا ہر شہری کے دل میں گھر بنا لیا

پنجاب رینجرز نے کہاہے کہ اہلکاروں نے اطلاع ملنے پر جنوبی پنجاب کے علاقے تھل میں چھپے ہوئے دہشتگردوں کیخلاف آپریشن کیا جس میں پانچ دہشتگرد ہلاک ہو گئے ہیں جبکہ دو کو گرفتار کر لیا گیاہے ،دہشتگردوں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں ایک جوان شہید ہو گیا ہے ،کامران کی حال ہی میں شادی ہوئی تھی۔جاری ہے ۔


پنجاب رینجرز کی جانب سے جاری کردہ پریس ریلیز میں کہا گیاہے کہ ڈی جی خان کے نواحی علاقے تھل میں دہشتگردوں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں ایک فوجی جوان شہید ہو گیاہے جس کا نام کامران ہے ،جبکہ ایک ڈی ایس آر ہارون زخمی ہو ئے ہیں جنہیں ہیلی کاپٹر کے ذریعے ملتان کے سی ایم ایچ ہسپتال منتقل کر دیا گیاہے ۔رینجرز کا کہناہے کہ علاقے کو دہشتگردوں سے پاک کرنے کیلئے تاحال آپریشن جاری ہے ۔

ہلاک ہونے والے دہشتگرد پولیس سٹیشنز پر حملوں سمیت دیگر سنگین جرائم میں ملوث ہیں رینجرز کی جانب سے جاری پریس ریلیز میں کہا گیاہے کہ شہید ہونے والے کامران افضل ولد محمد افضل فیصل آباد کے نواحی علاقے جڑانوالہ کے رہائشی تھے ۔پاکستان کی حفاظت میں اپنی جان کا نذرانہ پیش کرنے والے اس سپاہی نے 8سال تک اپنی فرائض کی انجام دہی انتہائی قابل تحسین طریقے سے انجام دی اور انہوں نے حال ہی میں انسداد دہشتگردی کی ٹریننگ مکمل کی تھی جس کے بعد انہیں سپیشل آپریشنز رینجرز ٹروپس کا حصہ ہونے کے طور پر حال ہی میں ڈی جی خان میں تعینات کیا گیاتھا جبکہ کچھ ہی عرصہ قبل ان کی شادی بھی ہوئی تھی ۔

کیٹاگری میں : news

اپنا تبصرہ بھیجیں