نوجوان لڑکی کی شادی، رخصتی کا وقت آیاتو اپنا گھر چھوڑنے سے صاف انکار کردیا، وہ بھی کس وجہ سے؟آج تک بارات اس وجہ سے خالی ہاتھ نہ لوٹی ہوگی

بھارت کے دیہی علاقوں میں گھروں کے اندر ٹوائلٹ کا تصور نہیں پایا جاتا اور ہمیشہ سے لوگ کھلے مقامات پر رفع حاجت کرتے چلے آرہے ہیں۔ حکومت کو عوام کی صحت کی فکر ہوئی تو گھروں میں ٹوائلٹ کی تعمیر کیلئے ایک بھرپور آگاہی مہم چلائی گئی۔ اس مہم کے نتیجے میں لوگوں میں ٹوائلٹ کی اہمیت کے بارے میں شعور تو پیدا ہوا لیکن ساتھ ہی ایک نئے مسئلے کا بھی آغاز ہو گیا ۔ دیہاتی لڑکیاں شادی کے لئے دلہے کے گھر میں میں ٹوائلٹ کا مطالبہ کرنے لگی ہیں لیکن اکثر غریب دیہاتی مردوں کیلئے یہ سہولت فراہم کرنا ممکن نہیں ہو پاتا۔ یوں ٹوائلٹ کا جھگڑا شادیوں کیلئے خطرہ بن گیا ہے۔۔جاری ہے۔


ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق ٹوائلٹ کی عدم موجودگی کی وجہ سے شادی خطرے میں پڑ جانے کا تازہ ترین واقعہ ریاست راجستھان کے ضلع راجسمند میں پیش آیا ہے ۔ کیسر پورہ کے رہائشی شہجاج کی شادی تو ہو گئی لیکن ابھی دلہن کی رخصتی کی تیاریاں کی جا رہی تھیں کہ اس نے یہ کہہ کر دلہے کے ساتھ جانے سے انکار کر دیا کہ اس کے گھر میں تو ٹوائلٹ ہی نہیں ہے۔ دلہن نے صاف کہہ دیا کہ جب تک ٹوائلٹ کی تعمیر نہیں ہوگی وہ دولہے کے گھر نہیں جائے گی۔۔جاری ہے۔


دولہے کے والدین ابتدائی طور پر تو اس مطالبے پر بہت حیران ہوئے لیکن جب لڑکی نے ضد برقرار رکھی تو بالآخر وہ ٹوائلٹ تعمیر کروانے پر مجبور ہو گئے۔ جب تک دولہے کے گھر میں ٹوائلٹ مکمل نہیں ہو گیا دلہن کی رخصتی کھٹائی میںپڑی رہی۔ بھارتی میڈیا نے اس واقعہ کو اکشے کمارکی نئی فلم ”ٹوائلٹ ایک پریم کتھا  کی حقیقی کہانی قرار دے دیا ہے ۔

کیٹاگری میں : Viral