مرنے کے بعد جسم میں یہ تبدیلی آتی ہے اور پھر سے زندگی شروع ہوجاتی ہے جدید تحقیق میں پھلی مرتبہ سائنسدانوں نے ایسا انکشاف کردیا کہ غیرمسلموں کی واقعی ہوائیاں اُڑگئیں

اگرچہ اسلام کی صداقت سائنسی تصدیق کی مرہون منت نہیں مگرکئی باتیں جو اسلام نے آج سے پندرہ سو سال پہلے بیان کیں آج سائنس ان کی تصدیق کر چکی ہے۔ موت کے بعد زندگی اسلام کا وہ تصور ہے جس سے اکثر منکرین خدا انکار کرتے اور اس کی سائنسی دلیل مانگتے آئے ہیں۔ اب سائنس نے اس کی دلیل بھی پیش کر دی ہے۔۔جاری ہے ۔

برطانوی اخبار ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق امریکہ کی دو معتبر یونیورسٹیوں، یونیورسٹی آف واشنگٹن اور الباما سٹیٹ یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے اپنی تحقیق میں ثابت کر دیا ہے کہ موت کے بعد بھی ایک زندگی ہے۔ انہوں نے زیبرافش اور چوہوں پر تجربات کے بعد نتائج میں بتایا ہے کہ موت کے بعد زندگی ممکن ہے اور ان کا کہنا ہے کہ یہ عمل انسانوں میں بھی ہوتا ہے۔رپورٹ کے مطابق تحقیقاتی ٹیم کے رکن پیٹر نوبل کاکہنا تھا کہ ”جب کوئی انسان یا جانور موت کے منہ میں جاتا ہے تو اس کے تمام تر خلیے نہیں مرتے۔اجسام کے مختلف قسم کے خلیوں کی زندگی کا دورانیہ اور وجود میں آنے کا وقت بھی مختلف ہوتا ہے۔یہ ممکن ہے کہ موت کے بعد بھی کچھ خلیہ زندہ رہتے ہوں۔جاری ہے ۔

اور وہ اپنے آپ کو ری پیئر (Repair)کرنے کی کوشش کرتے رہتے ہوں۔ ہماری تحقیق کے مطابق بنیادی خلیوں (Stem Cells)میں یہ صلاحیت پائی جاتی ہے۔ہماری تحقیق میں یہ بھی ثابت ہوا ہے کہ موت کے کئی دن بعد تک اجسام کے جینز کی صوت بندی (Transcription)وقوع پذیر ہو سکتی ہے۔“

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول کریں ۔↓↓↓۔

کیٹاگری میں : Viral