جیولر کی بیوی گھر میں اکیلی تھی اتنے میں پانی دینے والا آیا اور شہوت کی نیت سے اس کا ہاتھ پکڑ کر

ایک جیولر کی بیوی گھر میں اکیلی تھی کے پانی والا آیا اُس نے جیولر کی بیوی کا ہاتھ  پکڑا اور چلا گیا جیولر کی بیوی نے سوچا کہ ہمارا تنا برسوں کا اعتبار اس نے کس طرح توڑ دیا ۔

۔۔جیولر کی بیوی کو دلی دُکھ ہوا اُس کی آنکھوں سے آنسوئوں نکل پڑئے ۔۔۔اور جب جیولر گھر آیا تو اُس نے بیوی سے رونے کی وجہ پوچھی تو ۔۔۔ تو جب جیولر نے بھی یہ بات سنی تواُس کی بھی آنکھوں میں آنسو آگئے ۔۔۔۔ بیوی نے پوچھا آپ کیوں روئے رہیں ہیں تو جیولر نے جواب دیا کے آج ایک عورت میرے پاس اپنی جیولری سیل کرنے آئی تھی تو مجھے اُس کا ہاتھ پسند آیا ۔۔۔میں نے بھی اُس عورت کے ہاتھ کو دبایا تھا ۔۔۔اور یہ میرے پر قرض ہوگا تھا ۔۔۔لہندا اُس پانی والے نے تمہارا ہاتھ دبائے کر یہ قرض پورا کر دیا

۔۔۔۔اب میں تمہارے سامنے سچی توبہ کرتا ہوں اور آج کے بعد میں کبھی بھی اس طرح کا کام نہیں کروں گا ۔۔۔جیولر نے اپنی بیوی سے کہا کل پانی والا آئے گا تو بتانا کے اُس نے کیا بولا ہے جب کل پانی والا آیا تو اُس نے بولا کے کل میں نے جو کام آپ کے ساتھ کیا اُس کے لیے مجھ معاف کردے ۔۔کل شیطان نے مجھ سے یہ غلط کام کر دیا تھا ۔۔۔اور میں نے سچی توبہ کر لیے ہے اور میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کے اب کبھی بھی اس طرح نہیں ہوگا

سچ بات تو یہ ہے کہ جیولہ نے غیر عورت کو ہاتھ لگنا سے تونہ کر لی ۔۔۔اور غیر مردوں نے بھی اُس کی عورت کو ہاتھ لگنا سے تونہ کر لی

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔