فحش فلموں کی ویب سائٹ پر تہماری مان کی سلمان تاثیر کے بیٹے شہباز تاثیرکا سوشل میڈیا پر شہری سے جھگڑا ایسی شرمناک ترین بات کہہ دی کہ سن کر ہی آپ کا رنگ لال ہوجائے گا

آج کل کے جدید دور میں معروف شخصیات سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر بہت سرگرم رہتی ہیں اور بعض اوقات انہیں مداحوں کی جانب سے منفی رائے بھی سننے کو ملتی ہے۔ کچھ شخصیات تو یہ برداشت کر لیتی ہیں مگر کچھ بھرپور جواب دینے کا فیصلہ کر لیتی ہیں اور پھر ایک ”جنگ“ سی شروع ہو جاتی ہے۔۔۔جاری ہے۔


الفاظ کی یہ تازہ ترین ”جنگ“ مرحوم سلمان تاثیر کے بیٹے شہباز تاثیر اور ایک سوشل میڈیا صارف کے درمیان ہوئی جو دیکھتے ہی دیکھتے اس قدر بڑھ گئی کہ اخلاقیات کی حدیں بھی پار ہو گئیں اور پھر شہباز تاثیر نے پاکستانی صارف کو ایسی بات کہہ دی کہ جان کر ہی آپ کا رنگ لال ہو جائے گا۔ یہ سب کچھ اس وقت شروع ہوا جب شہباز تاثیر نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) چیئرمین عمران خان کے ایک بیان پر تبصرہ کرتے ہوئے لکھا ”عمران خان کہتے ہیں کہ وہ دنیا میں سب سے زیادہ مشہور اور پہچان رکھنے والے پاکستانی ہیں۔۔۔ ہاہاہاہاہاہاہاہا۔ وہ یقینا نہیں جانتے کہ وسیم اکرم کون ہے۔۔۔“۔۔جاری ہے۔


بات یہیں ختم نہیں ہوئی بلکہ انہوں نے ’یا‘ کا صیغہ استعمال کرتے ہوئے فواد خان کا نام لیا اور پھر ماہرہ خان، راحت فتح علی خان اور علی ظفر کا ذکر بھی کر ڈالا اور تو اور انہوں نے ’آئی ٹو آئی اور اینجل‘ نامی گانے متعارف کرانے والے ”طاہر شاہ“ کا ذکر بھی کر دیا۔ان کے یہ ٹویٹس سامنے آنے پر علی نامی ٹوئٹر صارف نے لکھا ” میرے خیال سے ممتاز قادری ان دونوں سے زیادہ شہرت یافتہ ہیں۔“شہباز تاثیر صارف کی اس ٹویٹ پر غضبناک ہو گئے اور شرمناک جواب دیتے ہوئے فحش فلموں کی مشہور ویب سائٹ کا نام لے کر لکھا ”میرے خیال سے فحش فلموں کی معروف ویب سائٹ پر تمہاری والدہ کی پروفائل ان سب سے زیادہ شہرت رکھتی ہے۔خدشہ یہی تھا کہ شہباز تاثیر کے اس جواب کے بعد معاملہ اور بھی آگے بڑھے گا لیکن علی نے صرف اتنا ہی جواب دیتے ہوئے بات ختم کر دی کہ ” بڑے ہو جائیں انکل“۔۔جاری ہے۔


اس سارے معاملے کا نتیجہ یہ نکلتا ہے کہ کوئی بھی یہاں ٹھیک نہیں ہے۔ صارف کی جانب سے ممتاز قادری کا نام لئے جانے پر یقینا شہباز تاثیر نے جواب ہی دینا تھا لیکن دوسری جانب شہباز تاثیر بھی یقینا کوئی اور جواب دے سکتے تھے۔۔جاری ہے۔

مگر انہوں نے اخلاقیات کی حدیں بھی پار کر دیں۔ حالانکہ ایسے جواب کی کوئی ضرورت نہ تھی، اور صرف اتنا ہی کہا جا سکتا ہے کہ جس شخص نے آپ کو جواب دیا، اس کی والدہ کے بارے میں بات کرنے کی کیا ضرورت تھی؟

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔

کیٹاگری میں : news