مکہ کے معروف ریستوران میں گاہکوں کو حرام چیز بنا کر کھلانے کا انکشاف ہوگیا سعودی حکام بھی حیرت میں متلاہوگئے

مکہ مکرمہ کے ایک معروف ہوٹل میں گاہکوں کو فراہم کردہ کھانے میں چوہوں کی موجودگی کے انکشاف کے بعد اسے بند کردیا گیا۔عرب میڈیا کے مطابق شاہراہ عبداللہ خلیفی پر العتیبیہ کے مقام پر واقع معروف نجی ہوٹل میں ایک خاتون کو کھانا فراہم کیا گیا۔۔۔۔جاری ہے

جسے دیکھ کر وہ چونک گئی، خاتون کو ملنے والے کھانےمیں ایک پکا ہوا چوہا پایا گیا جس پر خاتون نے مقامی انتظامیہ کو شکایت کی۔انتظامیہ نے شکایت ملنے پر مذکورہ ہوٹل میں چھاپہ مارا اور چوہے والا کھانا تلف کردیا جب کہ صفائی ستھرائی کے ناقص انتظامات اور غیر معیاری کھانے پر ہوٹل کو بند کردیا گیا۔ حکام نے چھاپے کے دوران پکائے گئے چوہے بھی قبضے میں لےلیے۔اطلاع ملنے پر پولیس نے بھی کارروائی کرتے ہوئے ہوٹل کے عملے کو گرفتار کرلیا اور معاملے کی تفتیش شروع کردی۔خیال رہے کہ سعودی عرب میں قوانین انتہائی سخت ہیں۔۔۔۔جاری ہے

اور ا یسے واقعات کوئی انسانی غلطی ہی ہو سکتی ہے یہ کہنا کہ یہاں پر جان بوجھ کر گاہکوں کو ایسا کھانا کھلایا جا ر ہا ہت تو سعودی عرب میں یہ قطعی ممکن نہیں ۔ یا در ہے کہ شاہراہ عبداللہ خلیفی پر العتیبیہ کے مقام پر واقع معروف نجی ہوٹل میں ایک خاتون کو کھانا فراہم کیا گیا جسے دیکھ کر وہ چونک گئی، خاتون کو ملنے والے کھانے میں ایک پکا ہوا چوہا پایا گیا جس پر خاتون نے مقامی انتظامیہ کو شکایت کی۔انتظامیہ نے شکایت ملنے پر مذکورہ ہوٹل میں چھاپہ مارا اور چوہے والا کھانا تلف کردیا۔۔۔۔جاری ہے

جب کہ صفائی ستھرائی کے ناقص انتظامات اور غیر معیاری کھانے پر ہوٹل کو بند کردیا گیا۔ حکام نے چھاپے کے دوران پکائے گئے چوہے بھی قبضے میں لےلیے

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔

کیٹاگری میں : news