ایک میاں بیوی نے عہد کیا کہ ہم نیک زندگی گزاریں گے اور اپنی اولاد کو بھی مگر

ایک میاں بیوی نے عہد کیا کہ ہم صحیح اور نیک زندگی گزاریں گے اور کوئی کام خلاف شرع نہیں کریں تاکہ ہمارے بچے پر اچھے اثرات مرتب ہوں۔۔جاری ہے

اور وہ ایک اچھا انسان بنے چنانچہ انہوں نے اپنی انہی اصولوں پر اپنی ازدواجی زندگی کا آغاز کیا اور احتیاط کی زندگی گزارتے رہے ایک دن ایسا ہو کہ ان کے بچے نے سکول میں کسی دوسرے بچے کے بستے سے کچھ سامان چوری کرلیا استانی نے ماں باپ کو اطلاع کی اور انہیں اس بچے کی حرکت کے بارے میں بتایا ماں باپ دونوں سکوؒ گئے اور بچے کو تنبیہ کی اور ڈانتا دونوں گھر آکر اس بات پر غور کرنے لگے کہ ہم نے عہد کیا تھا کہ ہم نیک زندگی گزاریں گے۔۔جاری ہے

اور ہم نے اس پر عمل بھی کیا مگر بچے پر یہ منفی اثر کیسے ہوا اس نے چوری کیوں کی کافی غور و غوص کے بعد بیوی کہنے لگی اس میں غلطی میری ہے ہمارے گھر کے پڑوس میں ایک بیر کا درخت ہے جس کی ایک شاخ ہمارے گھر میں آتی ہے اس بچے کا حمل جب میرے پیٹ میں تھا۔۔جاری ہے

تو میں نے اس شاخ سے کچھ بیر بغیر اجازت کے توڑ کر کھالیے تھے اسی چوری کا اثر اس بچے پر ہوا معلوم ہوا کہ اولاد کے نیک اور صالح ہونے میں والدین کے تقویٰ اور صالحیت کا بڑا اثر ہوتا ہے

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول کریں ۔↓↓↓۔

کیٹاگری میں : Kahani

اپنا تبصرہ بھیجیں